National Tours & Travels GB

National tours & Travels is a travelling co. where we provide Cars, Land Cruisers on rent basis& give airlines ticketing, (domestic/international).

Operating as usual

13/03/2020

ساجد کراچی یونیورسٹی سے فارغ التحصیل، وادی شگر بلتستان کا ایک جواں سال استاد تھا۔
زمانہ طالب علمی میں ان کو یونیورسٹی کی کسی طالبہ سے محبت ہوئی۔ جنہیں بعد میں اس نے اپنی شریک حیات بنانے کا فیصلہ کیا، عشق کی آگ دونوں اطراف میں برابر لگی ہوئی تھی، اپنے اپنے خاندان اور روایات سے بغاوت کرکے دونوں نے شادی کر لی۔ حسب روایت ساجد کو تو گھر والوں نے بیوی سمیت قبول کر لیا لیکن ان کی بیوی کو اپنے خاندان والوں کی طرف سے اس بغاوت کے بعد قبولیت نہ مل سکی۔ روایات جب دونوں کے پاوں کی بیڑی بننے لگیں تو دونوں نے گہوارہ امن و محبت بلتستان آنے کا فیصلہ کیا۔ یہاں دونوں خوشی خوشی زندگی گزارنے لگے۔ شادی کے کچھ عرصہ بعد ان کے گھر پر اللہ کی رحمت نازل ہوئی اور انہیں ایک پھول سی بیٹی کی نعمت عطا ہوئی۔ اس کے بعد ساجد کی بیوی نے پڑھانا چھوڑ دیا اور بچی کو وقت دینے لگی جبکہ ساجد ان کے نان نفقے کے لئے نجی سکول میں پڑھاتا رہا۔ وقت گزرتا گیا۔ چند سالوں میں خزانہ قدرت ان پہ پھر مہرباں ہوا اس بار انہیں ایک چاند سا بیٹا عطا ہوا۔ بیٹا نہ صرف زریعہ رحمت بنا بلکہ وہ دونوں خاندانوں کے درمیان صلح کا "سالار" بن کر آیا۔ شاید اسی لئے بچے کا نام "سالار" پڑ گیا۔ سالار کی عمر ابھی کچھ مہینے کی تھی کہ ان کے ننھیال کی طرف سے ان کے امی ابو اور بہن کو باقاعدہ دعوت دی گئی۔ اب یہاں سے کراچی کا سفر اتنا آسان بھی نہ تھا، پھر ساجد سکول میں پڑھاتا تھا، چھوٹی بچی کی عمر بھی ابھی اتنی نہ تھی کہ وہ اپنی ماں کو اپنے نومولود بھائی کے ساتھ اتنا لمبا سفر آرام سے کرنے دیتی۔ یوں یہ طے ہوا کہ سردیوں کی چھٹیوں میں کراچی کے لئے عازم سفر ہو جائیں گے۔
دوسری طرف فکر کے نہاں خانوں میں کچھ نامساعد خدشات بھی ابھر ابھر کر آتے تھے کہ کہیں یہ دعوت خفگی کی بھینٹ نہ چڑھ جائے اس خدشے کو فرو کرنے ننھے سالار کے ننھیال نے انہیں زاد راہ بھی بھجوائی تھی۔ اب تک تو کئی بار فون پر بات چیت بھی ہوچکی تھی۔ نانا نانی ننھے مہمانوں کو گود میں لینے کے لئے بیتاب تھے۔
سردیوں کی چھٹیوں میں ساجد، ان کی اہلیہ اور بچے کراچی چلے گئے۔ وہاں سالار کے ننھیال اور اقربا نے ان کی خوب مدارات کیں۔ نم آنکھوں کے ساتھ معافی تلافی ہوئی۔ سب مل کر خوب گھومے پھرے۔ بلاخر ساجد کے لئے سکول کھلنے کا وقت آڑے آیا۔ ادھر واپسی کی نیت باندھی، ادھر سالار کی اماں کے جہیز کے بقایاجات میں یہ لے وہ لے شروع ہوا۔ گھر بھر کی ضرورت کی تمام اشیاء، ساجد کے گھروالوں اور رشتہ داروں اور ان کی زوجہ کی سہیلیوں کے لئے تحفے تحائف بھی باندھ دئے گئے۔ یوں اب کے بار وہ اس جذبات بھرے انداز سے رخصت کئے کہ جیسے ایک باپ نے اپنی بیٹی کو رخصت کرنے کا حق ادا کردیا۔

اب واپس گلگت بلتستان واپس جانے کےلئے رخت سفر باندھا لیے
کراچی سے سکردو بلتستان پہنچنے میں بائی روڈ 3 دن لگتے ہیں
ساجد اور اسکی فیملی کراچی سے 24 گھنٹے کا طویل سفر طے کرنے کے بعد راولپنڈی پہنچ گئے، 1 رات راولپنڈی میں stay کرنے کے بعد اگلے دن ایک کوسٹر میں سکردو کے لیے روانہ ہو گئے، راولپنڈی سے سکردو بھی 24 گھنٹے کا راستہ ہے جو کہ انتہائی کٹھن اور دشوار گزار راستوں پر مشتمل ہے سکردو پہنچنے سے تین چار گھنٹے پہلے تک دونوں خاندانوں کا متواتر فون آتا رہا، سب کی خیر خیریت پوچھتے رہے۔ سب ٹھیک چل رہا تھا۔ لیکن صبح کاذب کو اب کے کچھ اور منظور تھا۔ چھبیس جانوں کو لئے رواں دواں گاڑی، جب سب نیند و خمار میں گم سم تھے، دونوں پھول سے بچے اپنے ماں باپ کے سینے سے لگے ہوئے تھے، کہ اچانک گاڑی خطرناک موڑ کاٹتے ہوئے گہری کھائی میں جاچکی تھی کہ کسی مسافر کو سنھبلنے کا موقع نہ ملا اور کچھ ٹوٹی پھوٹی بس سے باہر گر گئے کچھ مسافر پچکی گاڑی میں پھنس کر رہ گئے اور گاڑی دریا بُرد ہوگئی۔
مقامی لوگ، مسافرین اور جس جس سے کچھ بن پڑا وہاں تک آن پہنچے، سرکاری امدادی ادارے، ریسکیو کا عملہ بھی پہنچا لیکن موقع ایسا تھا کہ بچی کھچی لاشیں ہی نکالی جا سکتی تھی۔ جو بہہ گئے ان کی تلاش میں ریسکیو والے سرگرداں تھے۔
ساجد کا پورا خاندان خوشیوں کو سمیٹ کر اس دنیا کو سدھار گئے۔ دو پھول سے بچے، ساجد اور ان کی اہلیہ اور باقی 20 میتیں پاک آرمی کے ہیلی کاپٹر کے ذریعے CMH skardu پہنچا دی گئیں، ضلعی انتظامیہ نے گھر تک لاشیں پہنچانے کا مزید بندوبست کیا۔ ساجد کے والد، والدہ، بھائی بہنوں اور اہل محلہ نے تاریخ میں پہلی بار ایسا قیامت خیز منظر بھی دیکھا کہ جب پورے کا پورا خاندان آسودہ خاک ہوئے۔ قبریں کھودتے ہوئے روح کانپ اٹھتی تھی۔ قبریں دیکھ کر کلیجہ پارہ پارہ ہو جاتا ہے۔
ساجد کے سسر اور دیگر عزیز کراچی سے ہوا کی طرح پہنچے، وہ اپنی آنکھوں پر یقین نہیں کر پا رہے تھے۔ وہ دو سال کی رجا، سات ماہ کے سالار اور ان کے ماں باپ کی قبروں پر حاضر ہو کر فرط غم سے نڈھال تھے۔

اللہ تعالی مرحومین کو جنت میں جگہ عطا کرے، پسماندگان کو ہمت اور صبر عطا کرے۔ آمین

Ye hadsa 9.march.2020 ko pesh aya😭

Photos from Online Naveed-e-Assar's post 09/03/2020

Photos from Online Naveed-e-Assar's post

27/07/2019

بریکنگ نیوز۔۔۔۔!
عالمی شہرت یافتہ سرفہ رنگاہ کولڈ ڈیزرٹ جیپ ریلی 23اگست 2019 سے 25 اگست 2019 تک جاری رہے گی جس میں ملک کے نامور بائیکرز سمیت عالمی شہرت یافتہ جیپ ریسرز شرکت کریں گے۔اس موقع پر ثقافتی شو، ادبی میلہ، پیراگلائیڈنگ، اور دیگر مختلف پروگرامز منعقد ہوں گے۔

Photos from Daily K2's post 23/06/2019

Photos from Daily K2's post

05/07/2018

Hunza. KKH pe Jafar Abad k muqam par car ulat gayi. Car mai mojuud tamam musafir mehfooz.

02/07/2018

Jisay Allah rakhay usay kn chakhay...

Photos from InfoTainment's post 30/06/2018

Photos from InfoTainment's post

13/05/2018
Causes of increasing Accidents on Karakoram Highway (KKH) 24/03/2018

Causes of increasing Accidents on Karakoram Highway (KKH)

Causes of increasing Accidents on Karakoram Highway (KKH) Karakoram Highway (KKH) is a 1300 km national highway in Pakistan which extends from Hasan Abdal (Punjab) to Khunjarab Pass. Accidents...

Timeline Photos 28/06/2017

Timeline Photos

Photos from National Tours & Travels GB's post 21/06/2017

naran valley

Photos from National Tours & Travels GB's post 16/06/2017

Splendid hotel apartment Rawaplindi.

Timeline Photos 10/09/2016

traffic disrupted on the naran kaghan due to collapsing of makeshift bridge near batakundi

Timeline Photos 15/08/2016

Timeline Photos

Untitled Album 26/05/2015

at dasu

07/05/2015

special offer gilgit to islamabad car boking RS 10,000

17/04/2015

GOOD NEWS
National tours is offering reasonable fares from gilgit to rawalpindi..
Car= 10,000/_
Land cruiser= 18,000/_

Timeline Photos 31/12/2014

HAPPY NEW YEAR TO ALL

31/12/2014

happy new year

27/11/2014

Opening pindi office soon......

Timeline Photos 24/11/2014

Timeline Photos

Location

Address


Gilgit
15100

Other Tour Agencies in Gilgit (show all)
Active Tours Pakistan Active Tours Pakistan
Rahimabad,
Gilgit, <>

Active Tours Pakistan is proud to host cultural, historical tours, trekking trip, hunting tours, fishing tours, bike tours, scientific expeditions, research work, educational tours, helicopter safari, jeep safaris, and desert camel safaris in Pakistan.

Deosai Hotel Deosai Hotel
1
Gilgit, 46000

hoteling. tourism .transportation . trekking . tour operator .

AB Group Of Companies AB Group Of Companies
Gilgit, 15100

"ABGC" is a consortium of: NORTH BRIDGE CONSTRUCTION SERVICES PVT.LTD NORTH BRIDGE ENGINEERING SERVICES PVT.LTD GM TRADERS PVT.LTD NORTH BRIDGE ASSOCIATES (FIRM C)

Khunjerav Alpine Khunjerav Alpine
Gilgit, 15800

Khunjerav Alpine (Private) Limited

Hunza Tourism Hunza Tourism
Gilgit

Astore Deosai GB Travail & Tours Astore Deosai GB Travail & Tours
Deosai Base Camp Astore Chillum
Gilgit, 51214

دیوسائی ٹورسٹ ہوٹل اینڈ ریسٹورنٹ چلم نزد PWDریسٹ ہاوس

Black Glacier Tours Black Glacier Tours
Ghulkin Gojal Hunza
Gilgit, 15600

We organize tours to all parts of Pakistan. We guarantee that the services we provide are unmatched. We would create memories that you would cherish for the rest of your life.

Yaqoob and brothers tour's Yaqoob and brothers tour's
Gilgit

available for tours

𝓑𝓪𝓖𝓡𝓸𝓣𝓮 𝓣𝓞𝓤𝓡𝓢 𝓑𝓪𝓖𝓡𝓸𝓣𝓮 𝓣𝓞𝓤𝓡𝓢
Bagrote
Gilgit

Bagrote it is most beautifully valley of GB Bagrote Tours Is Company Based in Bagrote valley Northern Areas Of Pakistan.Ains To Promote Traver Package Country wide To The Both Local And Foreigner visitors.

Gilgit Baltistan Tour  & Travel Gilgit Baltistan Tour & Travel
Atif Shop 3 Near ATC KIU Road Konodass Gligit
Gilgit, 15100

all about tours and travell hotels in Gilgit Baltistan..

Duldul builder's & property dealer's Duldul builder's & property dealer's
Captam Qayoom Khan Shaheed Road Baig Market Danyore Gilgit
Gilgit, 05811

we deal with Building work property work and motors

GB Travel and Tour GB Travel and Tour
Pakistan
Gilgit

Provides information about the beautiful places of Gilgit-Baltistan and provides reasonable prices for transportation and leisure activities for tourists.